9.8 C
Pakistan
Monday, January 30, 2023

فلوریڈا: امریکی خلائی ادارے ناسا نے اورائن  کیپسول سے بنائی گئی زمین کی ویڈیو جاری کردی۔ اورائن کیپسول کو آج صبح مشرقی معیاری وقت کے مطابق دو بجے آرٹِمس اول مشن کے ساتھ خلاء میں روانہ کیا گیا۔ واضح رہے کہ جس راکٹ سے اسے خلا میں داغا گیا ہے وہ اب تک طاقتور ترین راکٹ بھی ہے۔

طاقتور ترین راکٹ نظام کو اسپیس لانچ سسٹیم یا ایس ایل ایس کا نام دیا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق امریکی ریاست فلوریڈا میں قائم کینیڈی اسپیس سینٹر سے اس 4 ارب ڈالرز کی لاگت سے بنائے گئے مشن کو روانہ کیا گیا۔

24 سیکنڈ کے کلپ میں دیکھا جاسکتا ہے کہ جیسے جیسے راکٹ دور جارہا ہے، زمین چھوٹی ہوتی جارہی ہے۔

آرٹِمس کے آفیشل ٹوئٹر اکاؤنٹ پر لکھا گیا کہ @NASA_Orion کے چاند کے لیے #Artemis اول مشن شروع کرنے کے ساتھ ہی اسپیس کرافٹ نے ہمارے سیارے کا یہ خوبصورت منظر عکس بند کیا۔

آرٹیمس اول  کو یہ دِکھانے کے لیے بنایا گیا ہے کہ ایس ایل ایس اور اوریون کیپسول خلاء نوردوں کو آرٹِمس دوم اور آرٹِمس سوم مشنز میں لے جانے کے لیے تیار ہیں۔

اوریون کیپسول چاند کے گرد چکر لگائے گا اور تقریباً 21 لاکھ کلو میٹر کا فاصلہ طے کر کے واپس زمین پر آجائے گا۔

اورائن کل 64 ہزار کلومیٹر سے زائد کا سفر طے کرتے ہوئے چاند کے ماورا جائے گا اور دوبارہ زمین پر لوٹے گا۔ اس پورے عمل میں کل 25 روز لگیں گے۔ مشن کا اہم مقصد چاند پر دوبارہ قدم رکھنے کو ممکن بنانا ہے اور اس سے قبل تمام مراحل اور ماحول سے متعلق معلومات جمع کرنا ہے۔ اسے آرٹیمس ون کا نام دیا گیا ہے جبکہ آرٹیمس ٹو منصوبے میں انسانی مشن شامل ہوگا۔

یہ مشن امریکی خلائی ادارے کے چاند پر نصف صدی سے زائد عرصے کے بعد دوبارہ قدم رکھنے کی کوشش کا پہلا مرحلہ ہے جس کی کامیابی کے بعد عملے کے ساتھ چاند کے گرد ایک چکر 2024 میں لگایا جائے گا۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,017FansLike
0FollowersFollow
20,500SubscribersSubscribe
- Advertisement -

Latest Articles