22.5 C
Pakistan
Tuesday, September 14, 2021

افغان صدر کا دورہ امریکہ؟

سی نیوز انٹرنینشل ڈیسک

افغان صدر اشرف غنی کا دورہ امریکہ ، سب سے اہم بات وقت کا انتخاب تھا ۔ اشرف غنی  انتہائی اہم وقت پر امریکہ پہنچے ۔دنیا بھر میں ان کے اس دورے کو اہم قرار دیا گیا جس کی سب سے بڑی وجہ افغانستان میں افغان طالبان کا تیزی سے مختلف اضلاع پر قبضہ جمانا ہے۔ یقینا افغان صدر امریکی انخلا کے ساتھ ہی افغانستان میں طالبان کی بڑھتی کارروائیوں کی وجہ سے پریشان ہیں ۔ دنیا نے دیکھا کہ طالبان نے بڑی آسانی کے ساتھ کئی علاقوں پر قبضہ جما لیا جبکہ دھماکوں میں بھی اضافہ ہو گیا ۔ جو اس بات کا واضح ثبوت ہیں کہ امریکی فورسز کی غیر موجودگی میں افغان صدر کے لئے ملک پر کنٹرول برقرار رکھنا مشکل ہے۔ایسے میں اُنہیں امریکہ کی مدد درکار ہے۔مگر امریکہ افغانستان کے ھوالے سے اہم فیصلہ لے چکا ہے،صدر جو بائیڈن نے دو ٹوک الفاظ  میں کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ افغانوں کو خود فیصلے کرنا ہونگے۔تاہم امریکا افغان حکومت کی حمایت جاری رکھے گا ، امریکی صدر جو بائیڈن نے دو ٹوک الفاظ میں افغانستان میں مداخلت پر بیزاری کا اقرار کیا ہے اور افغانوں کو اپنے پاؤں پر کھڑے ہونے کا پیغام بھی دیا ہے ۔ مگر دنیا دیکھ رہی ہے کہ امریکی انخلا کے بعد افغانستان میں حالات ایک بار پھر آؤٹ آف کنٹرول ہو جائیں گے جن کے ہمسائیہ ممالک ایران  ، بھارت اور خاص طور پر پاکستان پر بھی اثرات دیکھے جائیں گے ۔دنیا اس وقت سوچ رہی ہے کہ امریکا کہ افغانستا  ن سے چلے جانے کے بعد کیا حالات پیدا ہونگے اور ان سے کیسے نبردآزما ہوا جا ئے گا ۔ کیا طالبان وعدوں کے مطابق افغانستان میں امن معاہدے پر قائم رہیں گے ؟ دوسری طرف جو بائیڈن کے دوٹوک جواب کے بعد افغان صدر اشرف غنی پرعائد ذمے داریوں میں بھی اضافہ ہو گیا ہے ۔ طالبان کے ساتھ کیسے نمٹا جائے ؟ کیا طالبان الیکشن کے ذریعے اقتدار میں آنے یا نہ آنے کے لئے رضامند ہوجائیں گے؟ کیا طالبان مذاکرات کی میز پر آئیں گے ؟ اگر طالبان مذاکرات کی میز پر نہیں آتے تو کیا لائحہ عمل اپنایا جا سکتا ہے؟ کوئی بھی فیصلہ لینے سے پہلے افغان صدر اشرف غنی کو اپنے ملک کے حالات اور دنیا کو بھی مدنظر رکھنا ہوگا ۔ اشرف غنی اس وقت مشکل فیز سے گزر رہے ہیں طالبان کے ہاتھوں اُنہیں مشکلات کا سامنا ہے اور ان میں مزید اضافہ بھی ہو سکتا ہے کیونکہ طالبان نے صرف طاقت کا استعمال کرنا سیکھا ہے ۔ یہ سب کچھ مفروضہ بھی ثابت ہو سکتا ہے طالبان مثبت لائحہ عمل بھی اپنا سکتے ہیں ۔ مگر دنیا خوف کا شکار ہے کہ کہیں ایک بار پھر افغانستان میں خانہ جنگی کا آغاز نہ ہو جائے ۔افغانستان میں خانہ جنگی کے نتیجے میں اس کے ہمسائیہ ممالک بری طرح سے متاثر ہونگے ۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,017FansLike
0FollowersFollow
0SubscribersSubscribe
- Advertisement -

Latest Articles