27.4 C
Pakistan
Saturday, September 18, 2021

افغانستان میں امن ضروری؟

تحریروترتیب:سی نیوز ڈیسک

افغانستان پاکستان کا ہمسایہ ملک ہے جو ایک عرصہ سے خلفشار کا شکار ہے ۔ تاریخ بتاتی ہے کہ افغانستان ہمیشہ سے ہی قتل و غارت اور لوٹ مار کا مرکز رہا ہے ۔ کبھی روس نے اسے فتح کیا تو کبھی افغانستان افغان طالبان کا مرکز بنا ۔ اس ملک کے حالات مسلسل تبدیل ہوتے رہے ہیں ۔ ہر ایک خواہش رہی ہے کہ افغانستان میں امن قائم ہو یہاں کے لوگوں کا معیار زندگی بہتر ہو جائے یہ ملک ترقی کرے اور اس کے ہمسایہ ممالک میں بھی امن قائم ہو سکے مگر ایسا نہیں ہو سکا ۔ نائن الیون کے واقعہ کے بعد افغانستان پوری دنیا کی نگاہوں کا مرکز بن گیا ۔ امریکہ نے اپنی افواج افغانستان میں اتار دیں اور طالبان کو شکست کا سامنا کرنا پڑا مگر وہ گوریلا جنگ لڑتے رہے ۔

ائے  روز دھماکے ہوتے رہے ہیں تاہم امریکی افواج نے نیٹو کی مدد سے حالات پر قابو پا لیا ۔ اہستہ اہستہ حملے کم ہو گئے ، حالات میں بہتری انے لگی۔ افغان حکومت قائم کر دی گئی ، کئی طالبان لیڈر مارے گئے ۔ افغانستان میں حالات بہتر ہوئے تو اس کے پاکستان پر بھی مثبت اثرات مرتب ہوئے ۔ افغانستان سے بھاگنے والے دہشت گردوں نے پاکستان کے قبائلی علاقوں کا رخ کیا جہاں اُنہیں پاک فوج کے ہاتھوں مشکل حالات کا سامنا کرنا پڑا ۔ ان میں سے بہت سے دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا گیا بچ جانے والوں نے دوبارہ افغانستام کا رخ کیا ۔

ان تمام حالات کے باوجود طالبان کو مذاکرات کی میز پر انا پڑا اور ایک طویل عرصے کے بعد امریکہ نے افغانستان سے اپنی افواج نکالنے کا اعلان کیا جو اس وقت جاری ہے اور قوی اُمید ہے کہ ستمبر سے پہلے انخلا مکمل ہو جائے گا ۔ مگر دوسری جانب جسیے جیسے انخلا کیا جا رہا ہے ویسے ویسے افغانستان کے حالات پھر سے خراب ہوتے جا رہے ہیں ۔ طالبان ایک بار پھر تیزی کے ساتھ افغانستان میں اہم علاقوں پر قبضہ کرنے کی کوششیں کر رہے ہیں ۔ دوسری طرف پاکستان کو ایک بار پھر افغانستان میں موجود دہشت گردوں کی جانب سے حملوں کا خطرہ بڑھ گیا ہے  جس کے پیش نظر وزیراعظم عمران خان اور وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے دو ٹوک موقف اختیار کیا ہے کہ اب نہ تو پاکستان امریکہ کو اپنی سر زمین استعمال کرنے کی اجازت دے گا اور نہ ہی افغان طالبان کو پاکستان میں کارروائیاں کرنے دے گا ۔

اس تمام تر جدو جہد کے باوجود حالات قابو سے باہر ہوتے جا رہے ہیں ۔ جس کے پیش نظر وزیراعظم پاکستان عمران خان نے واضح کہا ہے کہ حالات کو دیکھتے ہوئے افغانستان کے اپنی سرحد کو بند کر دیں گے ۔ یقینا اس حالات میں پاکستان کی حکمت عملی انتہائی اہم ہو گئی ۔ افغانستان میں بدتر ہوتے ہوئے حالات پاکستان کے لئے بھی خطرہ ہیں ۔ وقت کا تقاضا ہے کہ خوب سوچ سمجھ کر اور بغیر کسی دباو کے حکمت عملی اپنائی جائے جو پاکستان کے مفاد میں ہو ۔ پاکستان ایک امن پسند ملک ہے اور چاہتا ہے کہ افغانستان میں امن قائم ہو یہی وجہ کہ امن مذاکرات میں پاکستان نے اہم کردار ادا کیا جسسے ساری دنیا نے سراہا ہے ۔ اب ضرورت اس امر کی ہے پاکستان مشکل حالات کا سامنا کرنے کے لئے دانشمندانہ انداز اور پالیسی اپنائے ۔

Related Articles

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Stay Connected

22,017FansLike
0FollowersFollow
0SubscribersSubscribe
- Advertisement -

Latest Articles