اسرائیل پھر اوٹ اف کنٹرول، لبنان پر فضائی حملے

0
20

اسرائیل کسی کی نہ مانوں پالیسی پر ڈٹا ہوا ہے ۔کبھی نہتے فلسطینوں کا خون بہایا جاتا ہے تو کبھی کسی دوسرے عرب ملک پر حملے شروع کر دیئے جاتے ہیں ۔اسرائیل نے لبنان کے ساتھ ایک بار پھر محاذ گرم کر کر دیا ہے ۔اور دو ہزار چودہ کے بعد اب پھر حملے شروع کر دیئے ہیں ۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائيلی فوج نے بیان میں کہا کہ لبنان سے اسرائیل پر متعدد راکٹ فائر کیے گئے جس کے جواب میں ہم نے لبنان میں کئی حملے کیے جن میں راکٹ فائر کرنے کے مقامات اور اسلحے کو نشانہ بنايا۔ اس کے ساتھ ساتھ ایک اضافی ہدف کو بھی نشانہ بنایا گیا جہاں سے ماضی میں راکٹ حملے ہوتے رہے ہیں۔ امريکا نے اسرائيل پر راکٹ حملوں کی مذمت کی ہے۔

اسرائیل ایئرفورس غزہ میں حماس اور شام میں حزب اللہ کے ٹھکانوں پر مسلسل حملے کرتی رہتی ہے لیکن 2014 کے بعد یہ پہلی بار ہوا ہے کہ اس نے لبنان میں بمباری کی ہے۔ لبنانی ٹی وی کے مطابق اسرائیل نے سرحد سے 7 میل دور محمدیہ کے علاقے پر 2 حملے کیے تاہم ان میں جانی و مالی نقصانات کی تفصیلات جاری نہیں کی گئیں۔

گزشتہ دو روز میں لبنان سے اسرائيل پر چار راکٹ داغے گئے تھے جس میں کوئی ہلاک یا زخمی نہیں ہوا تاہم 4 افراد خوف کا شکار ہوئے تھے جس پر انہیں طبی امداد فراہم کی گئی تھی۔ جواب میں اسرائیلی فوج نے بھی جنوبی لبنان پر گولہ باری کی جس کے نتیجے میں کئی مقامات پر آگ بھڑک اٹھی۔ لبنانی فوج نے بتایا کہ اسرائیلی فوج نے 92 گولے فائر کیے جبکہ ہم راکٹ حملوں کی بھی تحقیقات کررہے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here